RSS

IBN E INSHA (GHAZAL)

17 Sep

 

Insha Ji is my favourite among great poets of Urdu and among great mazah nigars. His simplicity and charm are almost innocent like that of a child. But he is full of wisdom.

 

 

 

 

 

Advertisements
 
2 Comments

Posted by on September 17, 2011 in adab and literature

 

2 responses to “IBN E INSHA (GHAZAL)

  1. Rafiullah Mianah

    September 20, 2011 at 12:55 am

    Wah Shakil Akhtar sahib, Insha ji ki kia khobsorat ghazal parhwadi ap ne.
    Ghor andhera cha jaata he khalwat e dil main shaam hue..
    kia khobsorat andaz e bayan he..
    boht shukria

     
    • shakilakhtar

      September 20, 2011 at 8:29 am

      Janab Rafi sahab assalamo alekum
      مجھے پتہ تھا کہ آپ کو پسند آئیں گی- غزلیں ھی ایسی ھیں-
      کوئ میر سا شعر کہا تم نے? انشاء جی نے اس شعر سے ثابت کیا یے کہ وہ بھی غالب کی طرح معتقد_میرہیں- غالب نے البتہ
      خود کو بھی استاد کہ کر میر کی استادی کا اعتراف کیا ہے
      ریختی کے تم ہی استاد نہیں ہو غالب
      کہتے ہیں اگلے زمانے میں کوئ میر بھی تھا
      غلب نے ہی کہا ہے
      غالب اپنا یہ عقیدہ ہے بقول ناسخ
      آپ بے بہرہ ہے جو معتقد میر نہیں

      ہم خود بہت معتقد ہیں اور ساتھ میں بے بہرے تو ہیں ہی
      لیکن غالب اور انشاء نے یہ شعر کہ کر اپنا حقیقی اعتقاد ظاہر کیا ہے اور ہمیں یقین ہے کہ بے بہرے ہونے کے تانے سے بچنے کے لئے نہیں-

       

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

 
%d bloggers like this: